Arabic Grammar (Surf o Nahv) – Islamic Center
  • "O my Lord! increase me in knowledge" (135/20)

Arabic Grammar (Surf o Nahv)

Arabic Grammar (Surf o Nahv)

Arabic Grammar (surf o nahv)

Language is the road map of a culture. It tells you where its people come from and where they are going, Arabic is a fascinating, complex language with a rich history and beautiful script, and it’s definitely worth consideration as a field of study!

“Arabic is a very rich language; it has different dialects and different calligraphic forms and styles,” says Hasan Al Naboodah, an Emirati historian and dean of the College of Humanities and Social Sciences at UAE ­University, in an interview about the Arabic language’s origins. Arabic – a Semitic language with its origins in the 1st and 4th centuries CE, with similarities to the ancient languages of Hebrew, Aramaic and ­Phoenician – is today the lingua franca of the Arab world and around 400 million people speak it. Modern Arabic is the primary language in four major distinct regional dialects, including the Arabic of the Maghreb (North Africa), Egyptian Arabic (Egypt and Sudan), Levantine Arabic (Lebanon, Syria, Jordan, and Palestine), and Iraqi/Gulf Arabic.

There is an abundance of reasons why you might consider enrolling in Arabic language course right away, but here are the top four you should consider. Studying Arabic could be the best decision you ever make!

  1. It’s essential to understanding the world’s second-largest religion, Islam.

Language, culture, and religion are intimately linked together — it’s almost like one cannot be understood without the other. “Islam is the second largest religion in the world, and the first largest religion in the Arab world. Islam is not only a religion to many Arabs, but also a lifestyle. When studying Arabic, you are not only learning a language but you also gain insight about Islamic beliefs and traditions,” writes TheArabAcademy.com. If you are interested in learning and understanding more about Islam, then studying Arabic is your gateway into a better understanding of this complex and intriguing religion۔

  1. Arabic can connect you to a rich history and another civilization. Studying Arabic will offer you a more nuanced understanding of Arab culture

Arab culture is rich and interesting. Learning the language will enable you to read some of the famous classic literature. If you are a fan of Islamic literature, Quran, Hadith, Seerah of Holy prophet Hazrat Muhammad, Qasida Burda, Aladdin, Ali Baba, and Sindbad the Sailor, imagine reading the many stories in The One Thousand and One Nights (Alf laylah wa laylah) or the poems of Hafiz and Ahmad Shawqi in their original versions. You’ll also gain a more in-depth and better understanding of Arab history with its complexities and knowledge of how “one tongue, many people” has been put into practice over millennia.

  1. Arabic is spoken in many countries

The United Language Group reports that, “Arabic is the official language of over 20 countries, and has nearly 300 million native speakers.

  1. Arabic speakers are in high demand for the great number of jobs and opportunities in the world for which Arabic is an essential requirement.

زبان ایک ثقافت کی نشاندہی کرتی ہے، یہ زندگی کی راہوں کو بیان کرتی ہے ، عربی ایک پُرجوش  اورپیچیدہ زبان ہے جس کی ایک متمول تاریخ اور خوبصورت اسکرپٹ ہے ، یہ یقیناً سیکھنے کے لائق زبان ہے ۔

عربی ایک بہت ہی وسیع  زبان ہے۔ عربی زبان کی ابتداء کے بارے میں ایک انٹرویو کے دوران ، عرب امارات کے  مورخ اور متحدہ عرب امارات کے یونیورسٹی آف ہیومنیٹیز اینڈ سوشل سائنسز کے ڈین ، حسن النبوڈا کا کہنا ہے کہ ،”عربی کی مختلف بولیاں اور مختلف خطاطی اور طرزیں ہیں”۔ عربی – پہلی اور چوتھی صدی عیسوی میں ایک سامی زبان جس کی اصل ہے ، عبرانی ، ارایمک اور فینیشین کی قدیم زبانوں کی مماثلت کے ساتھ – آج کی اس دنیا میں یہ چالیس کروڑ لوگوں کی زبان ہے ہے ۔ جدید عربی علاقائی اعتبار سے چاربڑے حصوں میں بولی جاتی ہے ، مغرب کی عربی (شمالی افریقہ) ، مصری عربی (مصر اور سوڈان) ، لیونتین عربی (لبنان ، شام ، اردن ، اور فلسطین) ، اور عراقی / خلیج عربی(سعودی عرب، امارات )

عربی ایک بہت ہی وسیع  زبان ہے۔ عربی زبان کی ابتداء کے بارے میں ایک انٹرویو کے دوران ، عرب امارات کے  مورخ اور متحدہ عرب امارات کے یونیورسٹی آف ہیومنیٹیز اینڈ سوشل سائنسز کے ڈین ، حسن النبوڈا کا کہنا ہے کہ ،”عربی کی مختلف بولیاں اور مختلف خطاطی اور طرزیں ہیں”۔ عربی – پہلی اور چوتھی صدی عیسوی میں ایک سامی زبان جس کی اصل ہے ، عبرانی ، ارایمک اور فینیشین کی قدیم زبانوں کی مماثلت کے ساتھ – آج کی اس دنیا میں یہ چالیس کروڑ لوگوں کی زبان ہے ہے ۔ جدید عربی علاقائی اعتبار سے چاربڑے حصوں میں بولی جاتی ہے ، مغرب کی عربی (شمالی افریقہ) ، مصری عربی (مصر اور سوڈان) ، لیونتین عربی (لبنان ، شام ، اردن ، اور فلسطین) ، اور عراقی / خلیج عربی(سعودی عرب، امارات ) .

عربی زبان سیکھنا کثیر وجوہات کی بناء پر نہایت اہم ہے البتہ چار بڑی وجوہات یہاں ذکر کی جاتی ہیں

یہ زبان دنیا کے دوسرے بڑے مذہب ، اسلام کو سمجھنے کے لیے بنیادی حیثیت رکھتی ہے ۔

زبان ، ثقافت اور مذہب کا آپس میں گہرا تعلق ہے – یہ ایسا ہی ہے جیسے کسی دوسرے کو سمجھے نہیں جاسکتا۔ “اسلام دنیا کا دوسرا سب سے بڑا مذہب ہے ، اور عرب دنیا کا پہلا سب سے بڑا مذہب ہے۔ اسلام نہ صرف بہت سارے عربوں کا مذہب ہے ، بلکہ طرز زندگی بھی ہے۔ عربی کا مطالعہ کرتے وقت ، آپ نہ صرف ایک زبان سیکھ رہے ہوتے ہیں بلکہ اسلامی عقائد اور روایات کے بارے میں بھی بصیرت حاصل کرتے ہیں۔ اگر آپ اسلام کے بارے میں مزید معلومات حاصل کرنے اور سمجھنے میں دلچسپی رکھتے ہیں تو عربی کا مطالعہ کرنا اس پیچیدہ اور پیچیدہ مذہب کی بہتر تفہیم کا دروازہ ہے۔

عربی آپ کو ایک متمول تاریخ اور کسی دوسری تہذیب سے جوڑ سکتا ہے۔ عربی کا مطالعہ آپ کو عربی ثقافت کے بارے میں مزید متناسب تفہیم پیش کرے گا

عرب ثقافت متمول اور دلچسپ ہے۔یہ  زبان آپ کو مشہور کلاسکل ادب میں سے بہت کچھ پڑھنے کے قابل بنادے گی ۔ اگر آپ اسلامی لٹریچر ، قرآن ، حدیث ، سیرت النبی ﷺ ، قصیدہ بردہ ، علاء دین ، ​​علی بابا ،الف لیلیٰ، سندباداور احمد شوقی کو پسند کرتے  ہیں اور انہیں ان کی اصل لذت کے ساتھ پڑھنا اور سمجھنا چاہتے ہیں تو عربی آپ کےلیے ناگزیر ہے ۔

           بہت سے ممالک میں عربی بولی جاتی ہے۔

یونائیٹڈ لینگوئج گروپ کی رپورٹ ہے کہ ، “عربی 20 سے زیادہ ممالک کی سرکاری زبان ہے  اور 30 کروڑ انسانوں کی مادری زبان ہے ۔

عربی بولنے والوں کے لیے  پوری دنیا میں بہت طلب ہے ان کے لیے بہت ساری ایسی ملازمتیں اور مواقع موجود ہاں جہاں عربی زبان معلوم ہونا لازمی ہوتا ہے ۔.

Eligibility

All Man and woman who can read and write Urdu & use smart phone / computer are eligible for this Course

Age criteria : student must be 15 years and above. there is no limit for older side.

 وہ تمام خواتین وحضرات جو اردو لکھ پڑھ سکتے ہوں اور اسمارٹ فون یا کمپیوٹر چلانا جانتے ہوں اس کورس میں شرکت کے اہل ہیں۔

داخلہ کے امیدوار کی عمر کم ازکم پندرہ سال ہونی چاہیے اور زیادہ عمر کی کوئی حد مقرر نہیں لہذا برگزیدہ افراد بھی داخلہ لے سکتے ہیں۔

Key points

Faculty:       | MUFTI MUHAMMAD MAAZ MADANI

Duration: | 1 years

| The certificate will be given at the end of Course.

Classes for: |  Boys & Girls

Lecturers: | Friday & Saturday   |  from 09:00 pm to 11:00 pm

Medium: | LMS & Zoom

Admission Fee:|  1500 PKR for Pakistan Residents & 15 USD for others

Monthly Fee:|  1500 PKR for Pakistan Residents & 15 USD for others